ڈیجیٹل کرنسیوں میں مقابلہ: کون جیتے گا؟

ڈیجیٹل کرنسیوں میں مقابلہ: کون جیتے گا؟

2022-04-29 • اپ ڈیڈ

دوسری جنگ عظیم کے بعد دنیا بھر میں تجارتی جنگوں، گریٹ ڈپریشن اور غیر یقینی صورتحال کیوجہ سے ممالک کو بہت سی پیچیدگیوں کا سامنا کرنا پڑا۔ جولائی 1944 میں بریٹن ووڈز کانفرنس کے دوران، بہت سی بڑی معیشتیں مستقبل کیلئے انٹرا - کنٹری مالیاتی بہاؤ اور کرنسیوں کے "مقابلے" کو مقررہ زر مبادلہ کی شرحوں کے ذریعے جو کہ USD میں طے کی گئی کو ریگولیٹ کرنا چاہتی تھیں۔ اس لیے، انہوں نے ادائیگیوں کے عدم توازن کو ختم کرنے کیلئے بین الاقوامی مالیاتی فنڈ بنانے کا فیصلہ کیا۔ پورا نظام USD کے ارد گرد مبنی تھا جو سونے کے لیے قابل تلافی تھا۔ تاہم، بدنام زمانہ نکسن شاک نے امریکی ڈالر اور سونے کے درمیان مقررہ شرح مبادلہ کے دور کو ختم کر دیا۔ بنیادی مسئلہ یہ تھا کہ امریکہ کے پاس اتنا سونا نہیں تھا کہ وہ USD کے سرپلس کو پورا کر سکے۔ اس کے نتیجے میں امریکہ شدید تنزلی کی طرف بڑھتا گیا۔ یہ صورتحال امریکی معیشت کے استحکام کا پہلا محرک تھی۔ امریکی تاریخ کا دوسرا چونکا دینے والا لمحہ جس نے داخلی طور پر سونے کے معیار کو ختم کر دیا جو کہ ایک گریٹ ڈپریشن تھا، جس نے سونے کے لحاظ سے امریکی ڈالر کی قدر میں کمی کی۔

یورپی معیشتوں کو XX صدی کے دوران بھی فیاٹ fiat کرنسیوں کیساتھ بہت سے مسائل کا سامنا کرنا پڑا۔ مثال کے طور پر، ہنگری میں دوسری عالمی جنگ کے بعد تاریخ کی انتہائی افراط زر کی بدترین لہر میں سے ایک تھا کیونکہ اس کی معیشت بحرانوں اور نقصانات پر اعلی معاوضوں کی وجہ سے تباہ ہو گئی تھی۔ نتیجے کے طور پر، اس کی افراط زر 1.3 × 10^16 فیصد فی مہینہ (جس کا مطلب ہے کہ قیمتیں ہر 15 گھنٹے میں دگنی ہوتی جارہی تھیں)۔

افراط زر، ہائپر افراط زر، اور دیگر اقتصادی صورتحال کیساتھ جڑے خطرات فیاٹ fiat کرنسیوں کے مستقبل پر سوالیہ نشان لگاتے ہیں۔ ڈیجیٹل ٹیکنالوجیز کے نئے دور کیساتھ، ڈیجیٹل کرنسیاں وہی ہیں جس کے بارے میں ہر کوئی اس وقت بات کر رہا ہے۔ عالمی معیشتیں پیسے کے تبادلے کے لیے ایک شفاف، محفوظ، اور تیز تر طریقہ بنانے کی کوشش کر رہی ہیں۔ فنانس کی نئی ڈیجیٹل شکلیں پوری دنیا میں پھیلتی رہتی ہیں، جو حکومتوں کو پریشان کرتی ہیں اور سرمایہ کاروں کو ایک پرکشش موقع فراہم کرتی ہیں۔ تو، ایک طویل مدت تک ہمارے ساتھ کیا رہنے کا امکان ہے، اور جلد ہی کیا خاک میں بدل جائے گا؟

ڈیجیٹل روپیہ کیا ہے؟

سب سے پہلے، آئیے یہ معلوم کرتے ہیں کہ ڈیجیٹل پیسہ کیا ہے؟ ڈیجیٹل کرنسی یا الیکٹرانک پیسہ سے مراد کوئی بھی ایسی رقم ہے جو ڈیجیٹل سسٹم یا انٹرنیٹ پر منظم، ذخیرہ، یا تبادلہ کی جاتی ہو۔ ڈیجیٹل کرنسیوں کی تین اہم اقسام ہیں: کریپٹو کرنسی، ورچوئل کرنسی، اور مرکزی بینک کی ڈیجیٹل کرنسی۔ یہ یاد رکھنا بہتر ہوگا کہ تمام ورچوئل کرنسیاں اور کریپٹو کرنسیاں دراصل ڈیجیٹل کرنسیاں ہیں، لیکن تمام ڈیجیٹل کرنسیاں اس زمرے سے تعلق نہیں رکھ سکتیں ہیں۔

کرپٹو کرنسیز بطور پیسے کی ایک نئی شکل

کریپٹو کرنسی ڈیجیٹل منی کی سب سے مشہور اقسام میں سے ایک ہے جو کرپٹوگرافی میکانزم پر بنائی گئی ہے تاکہ اثاثوں کے لین دین کے ڈیجیٹل دستخطوں، فرد سے فرد کی نیٹ ورکنگ، اور ڈیسینٹرلائز سسٹم سے جڑی ہے۔ بلاکچین سسٹمز میں، پروف آف ورک یا پروف آف اسٹیک اسکیموں کو کرنسی بنانے اور اس کا انتظام کرنے کیلئے استعمال کیا جاتا ہے۔ کرپٹو کرنسیوں کو متحد کرنے والا بنیادی عنصر ڈی سینٹرلائز ہے۔

مسٹر Satoshi Nakamoto کی طرف سے بٹکوائن کی ایجاد نے حقیقی طور پر پیسے کے بارے میں تصور کو تبدیل کر دیا ہے۔ اس کے تین کلیدی پیرامیٹرز ہیں۔

  1. سب سے پہلے، یہ نجی ہے کیونکہ سرکاری حکام کیجانب سے اسے جاری نہیں کیا جاتا ہے۔
  2. یہ ڈیسینٹرلائز ہے۔ یونٹس صارفین کے ڈیسینٹرلائز گروپ کو جاری کیے جاتے ہیں۔
  3. اس میں جعل سازی کے خلاف ٹھوس ضمانتیں ہیں جو خفیہ نگاری اور گیم تھیوری کے امتزاج کے ذریعے کی جاتی ہیں۔

پیسے کی دوسری شکلوں کی طرح، بٹکوائن زر مبادلہ کے ذریعہ اور اکاؤنٹ کی اکائی کے طور پر کام کرتا ہے۔ جہاں تک قیمت کی قدر کا تعلق ہے، جو کہ رقم کا ایک اور فنگشن ہے، ایک قدرے قابل اعتراض موضوع ہے۔ ایک طرف، بٹکوائن گزشتہ دہائی کے بڑے حصہ داروں کے درمیان مالیاتی اثاثوں کی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے، اگر بہترین نہیں تو، ان میں سے ایک رہا ہے۔ تاہم، دوسری طرف، وقت کیساتھ ساتھ بٹکوائن کی قیمت میں اضافے میں نمایاں اتار چڑھاؤ اور گراوٹ بھی شامل تھی، جو چند برسوں سے جاری ہے۔

بٹکوائن کے علاوہ، ہزاروں کرپٹو کرنسیاں ہیں جن کا کل مارکیٹ کیپٹلائزیشن 2.56T$ سے زیادہ ہے۔ یہ سب ایک جیسی اقدار کا اشتراک کرتی ہیں: یہ کسی مرکزی اتھارٹی یعنی (بینک) کے ذریعہ ریگولیٹ یا حمایت یافتہ نہیں ہیں، تقسیم شدہ لیجر کا استعمال کرتے ہوئے بنائی گئی ہیں، اور خصوصی کمپیوٹر کوڈ (کرپٹوگرافی) کیساتھ انکریپٹ کی گئی ہیں۔

اگرچہ کرپٹو ایک جیسی خصوصیات کا اشتراک کرتی ہیں، لیکن یہ سب بالکل ایک جیسی نہیں ہیں۔ عام طور پر، کرپٹو کی تمام اقسام کو دو بڑے زمروں میں تقسیم کیا جا سکتا ہے: کوائنز جن میں بٹکوائن، ایتھرئم، لائٹکوائن، اور ٹوکنز (Tron، Vechain، Link) شامل ہیں۔ جبکہ کوائنز بلاکچین کے مقامی اثاثوں کے طور پر کام کرتے ہیں، موجودہ بلاکچین پر سمارٹ کنٹریکٹس کی مدد سے ٹوکن بنائے جاتے ہیں۔

مرکزی بینک ڈیجیٹل ہو رہے ہیں۔

بلاک چین ٹیکنالوجیز کی پیش رفت اور کرپٹو کرنسیوں کی تیز رفتار ترقی نے مرکزی بینکوں کو حرکت میں لے آئی ہیں۔ اب، حکومتیں کرپٹو مارکیٹ کو ریگولیٹ کرنے کی کوشش کر رہی ہیں اور ڈیجیٹل کرنسیوں کی ترقی میں بھی حصہ لے رہی ہیں۔

سنٹرل بینک ڈیجیٹل کرنسی مرکزی بینکوں کے لیے شفاف مالیاتی کارروائیوں کے لیے مستقبل کا حل ہے۔ تحقیق کے مطابق، دنیا بھر میں کم از کم 80٪ مرکزی بینک پیسے کی نئی شکل بنانے کے خواہاں ہیں۔ اس کی وجوہات سادہ ہیں: یہ مانیٹری پالیسی کے فیصلوں کو آسان بنا سکتی ہے، فریق ثالث کے خطرات کو ختم کر سکتی ہے اور غیر قانونی سرگرمیوں کو روک سکتی ہے۔ تاہم، اس طرح کی جدت میں خرابی بھی واضح ہے: اس سے مرکزیت کا مسئلہ حل نہیں ہوتا۔ ستم ظریفی یہ ہے کہ پہلا مرکزی بینک جس نے مرکزی بینک ڈیجیٹل کرنسیوں (CBDC) کو عملی جامہ پہنایا، وہ پیپلز بینک آف چائنا تھا، جس نے کئی صوبوں میں چینی یوآن کا ورچوئل ورژن متعارف کرایا۔ اگرچہ ریگولیٹر نے اسے گھریلو مقاصد کے لیے کیا، لیکن اس کیس نے دیگر ممالک کو خاص طور پر امریکہ کو پریشان کر دیا۔ امریکی حکام کا خیال تھا کہ ڈیجیٹل یوآن عالمی معیشت کے لیے خطرہ ہے جس نے امریکی ڈالر کی طاقت کو چیلنج کیا اور امریکی پابندیوں کا فائدہ اٹھایا۔ تاہم، ابھی تک، چینی یوآن اب بھی امریکی خارجہ پالیسی کے مفادات کو چیلنج کرنے سے بہت دور ہے۔

 دوسرے مرکزی بینکوں کے لیے، مثال کے طور پر، بینک آف انگلینڈ، یا یوروپی سنٹرل بینک، ان کے CBDC کی ترقی فی الحال ایک حقیقت کی بجائے ایک پروجیکٹ کی طرح نظر آتی ہے۔ لیکن، یقینی طور پر، اگر وہ آخر کار ڈیجیٹل کرنسیوں کے وسیع پیمانے پر استعمال کو نافذ کرتے ہیں، تو یہ عالمی مالیاتی سسٹم کو بدل دے گا۔  

ڈیجیٹل پیسوں کی دنیا میں بہت سے چیلنجز درپیش ہیں

جیسا کہ آپ اوپر کے پیراگراف میں دیکھ سکتے ہیں، مختلف ممالک میں مالیاتی نظام ایک نئے دور میں داخل ہو رہے ہیں، جہاں کرنسی کے تبادلے میں پہلے کا کردار پیسے کی ڈیجیٹل شکلوں سے تعلق رکھتا ہے۔ ایک طرف، ہمارے پاس مرکزی بینکوں کی طرف سے جاری کردہ رقم ہے۔ جو مرکزیت پر مبنی ہیں؛ جن کی معلومات کو ڈیٹا بیس میں محفوظ کیا جاسکتا ہے، جنہیں حکومتیں ریگولیٹ کر سکتی ہیں۔ لیکن، دوسری طرف، ان کے سسٹمز میں مختلف کرپٹو کرنسیوں کیساتھ ڈیسینٹرلائز نیٹ ورکس موجود ہیں۔ جو تیز ہیں، کرپٹوگرافک میکانزم کے ضابطے سے محفوظ ہیں، اور ان کے پاس ایک منفرد پرائیویٹ کی ہے جو آپ کو اس کرنسی کا مالک بناتی ہے۔

یہ دیکھتے ہوئے کہ حکومتیں کرپٹو کرنسیوں کو قبول کرنے کے راستے پر کام کر رہی ہیں، تیزی سے بدلتے ہوئے ماحول اور قوانین کی خرابیاں کرپٹو لوگوں کیلئے ایک "تفریح ​​اور کھیل" کی طرح دکھائی دیتی ہیں بجائے کسی سنجیدہ سرمایہ کاری کے۔ تاہم، سب کچھ تبدیل کرنے کیلئے تیار ہے۔ جتنے زیادہ لوگ اور کاروبار کرپٹو کرنسی کو ایک قدر کے طور پر اور زر مبادلہ کے ذریعہ کے طور پر قبول کریں گے، دنیا اتنی ہی تیزی سے ان کو اپناتی جائے گی۔ اس تبدیلی کی اچھی مثالوں میں، ہم PayPal کا ذکر کر سکتے ہیں، جس سے اسے اپنے ویلیٹ میں کرپٹو کو ذخیرہ کرنے اور آپریٹ کرنے کی اجازت ملتی ہے۔

آپ ان لوگوں میں شامل ہو سکتے ہیں جو پہلے ہی FBS کیساتھ مستقبل کو بہتر کرسکتے ہیں، کیونکہ آپ کرپٹو کرنسیوں کی ٹریڈنگ کر سکتے ہیں اور اپنے پرسنل ایریا میں ان میں ڈپازٹ اور واڈرا لے سکتے ہیں۔

اسی طرح

مارکیٹ کوریلیشن: تجاویز اور بصیرتیں
مارکیٹ کوریلیشن: تجاویز اور بصیرتیں

کوریلیشن آپ کو مارکیٹ کی نقل و حرکت کی پیشن گوئی کرنے میں مدد کرسکتا ہے۔ کوریلیشن ایک شماریاتی پیمانہ ہے جو اس بات کا تعین کرتا ہے کہ اثاثے ایک دوسرے کے ساتھ تعلق پر کیسے موو ہوتے ہیں۔

بلا جھجھک سوال پوچھیں

  • FBS کی جانب سے کمائی گئی رقم کیسے وڈرا کر سکتے ہیں؟

    طریقہ کار بہت سیدھا ہے۔ ویب سائٹ پر وڈرا کے صفحے یا FBS پرسنل ایریا کے فنانشل سیکشن پر جائیں اور وڈرا تک رسائی حاصل کریں۔ آپ کمائی ہوئی رقم اسی ادائیگی کے نظام کے ذریعہ حاصل کرسکتے ہیں جو آپ نے ڈپازٹ کرنے کے لئے استعمال کیا تھا۔ اگر آپ نے مختلف طریقوں کے ذریعہ اکاؤنٹ کو مالی اعانت فراہم کی ہے تو، جمع شدہ رقوم کے حساب سے تناسب میں اسی طریقوں کے ذریعہ اپنا منافع واپس لیں۔

  • FBS اکاؤنٹ کو کیسے کھولا جائے؟

    ہماری ویب سائٹ پر ‘اکاؤنٹ کھولیں’ کے بٹن پر کلک کریں اور پرسنل ایریا میں جائیں۔ تجارت شروع کرنے سے پہلے، ایک پروفائل کی تصدیق کروائیں۔ اپنے ای میل اور فون نمبر کی بھی تصدیق کروائیں، اپنی شناختی تصدیق کروائیں۔ یہ طریقہ کار آپ کے فنڈز اور شناخت کی حفاظت کی ضمانت دیتا ہے۔ ایک بار جب آپ تمام جانچ پڑتال کرلیں تو، ترجیحی ٹریڈنگ پلیٹ فارم پر جائیں اور ٹریڈنگ شروع کریں۔

  • ٹریڈنگ کیسے شروع کی جائے؟

    اگر آپ +18 سے زائد کی عمر رکھتے ہیں، تو آپ FBS میں شامل ہوسکتے ہیں اور اپنے FX سفر کا آغاز کر سکتے ہیں۔ ٹریڈںگ کرنے کے لئے، آپ کو ایک بروکریج اکاؤنٹ اور مالیاتی منڈیوں میں اثاثوں کے برتاؤ کے بارے میں مناسب علم کی ضرورت ہے۔ ہمارے مفت تعلیمی مواد اور ایک FBS اکاؤنٹ بنانے کے ساتھ بنیادی باتوں کا مطالعہ بھی شروع کریں۔ آپ ڈیمو اکاؤنٹ کے ذریعہ ورچوئل پیسہ سے اس پورے ماحول کی جانچ پڑتال بھی کرسکتے ہیں۔ ایک بار جب آپ تیار ہوجائیں تو، حقیقی مارکیٹ میں داخل ہوں اور کامیابی کے لئے ٹریڈںگ یعنی تجارت شروع کریں۔

  • لیول اپ بونس کو کیسے فعال کیا جائے؟

    اپنے FBS پرسنل ایریا کے ویب یا موبائل ورژن میں لیول اپ بونس اکاؤنٹ کھولیں اور اپنے اکاؤنٹ میں 140$ تک مفت حاصل کریں۔

ڈپوزٹ کریں اپنے لوکل طریقوں سے۔

ٹیم اسپرٹ کو محسوس کریں

ڈیٹا جمع کرنے کا نوٹس

ایف بی ایس اس ویب سائٹ کو چلانے کے لئے آپ کا ریکارڈ ترتیب دیتا ہے۔ "قبول" کا بٹن دبانے سے آپ ہماری پرائویسی پالیسی پر اتفاق کرتے ہیں۔

دوبارہ کال کریں

ایک مینجر جلد ہی آپکو کال کرے گا

نمبر تبدیل کریں

آپ کی درخواست موصول ہو گئ ہے

ایک مینجر جلد ہی آپکو کال کرے گا

اس فون نمبر کیلئے اگلی کال بیک کی درخواست
۔ میں دستیاب ہوگی

اگر آپ کو کوئی فوری مسئلہ درپیش ہے تو براہ کرم ہم سے رابطہ کریں
لائیو چیٹ کے ذریعے

اندروانی مسئلہ ،تھوڑی دیر بعد کوشش کریں

اپنا وقت ضائع نہ کریں – اس بات پر نظر رکھیں کہ NFP امریکی ڈالر اور منافع کو کس طرح متاثر کرسکتا ہے!

ابتدائی فوریکس گائیڈ بک

فاریکس پر نئے آنے والوں کیلئے یہ کتاب ٹریڈنگ کی دنیا کے بارے میں رہنمائی کرتی ہے۔

ابتدائی فوریکس گائیڈ بک

ٹریڈنگ شروع کرنے کے لئے سب سے اہم چیزیں
اپنا ای میل لکھیں اور ہم آپ کو مفت ابتدائی فوریکس گائیڈ بک بھیجیں گے

شکریہ آپکا ای میل موصول ہو چکا ہے

ہم نے آپ کے ای میل پر ایک خصوصی لنک ای میل کیا ہے۔
لنک پر کلک کریں اور اپنی فوریکس گائیڈ بک وصول کریں۔

آپ اپنے براؤزر کے پرانا ورژن کا استعمال کر رہے ہیں.

اپ ڈیٹ کریں اور محفوظ، مزید آرام دہ، پرسکون اور پیداواری ٹریڈنگ کے تجربے کے لئے ایک کوشش کریں.

Safari Chrome Firefox Opera