1. FBS >
  2. FBS بلاگ >
  3. ڈے ٹریڈرز کتنا کماتے ہیں؟
2023-05-29 • اپ ڈیڈ

ڈے ٹریڈرز کتنا کماتے ہیں؟

cover.png

ڈے ٹریڈر کیا ہے؟

ٹریڈنگ کی دنیا متعدد اقسام کے مختلف طریقوں کا احاطہ کرتی ہے اس کا دارومدار اس پر ہے کہ ٹریڈرز کتنی دیر تک پوزیشنز کو اوپن رکھتے ہیں اور وہ کتنی بار ٹریڈ کرنے کے خواہشمند ہیں۔ ڈے ٹریڈرز وہ ٹریڈرز ہیں جو ایک ہی دن کے اندر سکیورٹیز کی خرید و فروخت کرتے ہیں۔ وہ تقریباً کبھی بھی اپنی ٹریڈز کو رات بھر کھلا نہیں رکھتے اور ایک دن کے دوران ہونے والے قیمت کے کم اتار چڑھاؤ سے استفادہ کرتے ہیں۔

اس آرٹیکل میں آپ اس بارے میں جانیں گے کہ ڈے ٹریڈنگ، ٹریڈنگ کے دیگر طریقوں سے کس طرح مختلف ہے، ڈے ٹریڈرز ممکنہ طور پر کتنا پیسہ کماتے ہیں، نیز آپ ایک کامیاب ڈے ٹریڈر کیسے بن سکتے ہیں۔

اہم نکات

  • ڈے ٹریڈنگ میں ایک ہی دن کے اندر سکیورٹیز کی خرید و فروخت کرنا شامل ہے۔
  • ڈے ٹریڈرز کتنا منافع کما سکتے ہیں اس کا دارومدار ان کے سرمایے پر ہوتا ہے، بشمول وہ جس مارکیٹ میں ٹریڈ کرتے ہیں، ٹولز جو وہ استعمال کرتے ہیں، نیز وہ ٹریڈنگ کے لیے کتنا وقت وقف کرنے کے لیے تیار ہیں۔
  • ڈے ٹریڈرز ذاتی طور پر یا بڑے مالیاتی اداروں کے لیے کام کر سکتے ہیں، جو اس بات کا تعین کرتا ہے کہ ٹریڈنگ کو ان کے لیے آسان بنانے کی خاطر کون سے وسائل دستیاب ہیں۔
  • 20% سے کم ڈے ٹریڈرز، ڈے ٹریڈنگ کے ذریعے مسلسل پیسہ کما رہے ہیں۔ کامیاب ٹریڈرز ایک مستحکم ٹریڈنگ حکمت عملی تیار کر کے اور رسک مینجمنٹ ٹولز کو استعمال کر کے اپنا مقصد حاصل کرتے ہیں۔

ڈے ٹریڈر کیا کرتا ہے

چونکہ اسے ٹریڈز کے لیے طویل مدتی وابستگی کی ضرورت نہیں ہوتی، اس لیے ڈے ٹریڈنگ غالباً ٹریڈنگ کا نہایت مقبول ترین طریقہ ہے۔ ڈے ٹریڈرز ایسی سکیورٹیز ٹریڈ کرتے ہیں جن کی قیمتوں میں ایک ہی دن کے اندر نمایاں تبدیلی آتی ہے۔ اس میں اسٹاکس، تمام اقسام کی کرنسیز، فیوچرز یا آپشنز شامل ہیں۔ ایسی سکیورٹیز تلاش کرنا جن کی قیمتوں میں کچھ اتار چڑھاؤ کا امکان زیادہ ہوتا ہے، پوزیشنز اوپن کرنا، اور انہیں مختصر مدت کے لیے روکے رکھنا، عموماً چند گھنٹوں کے لیے، لیکن بعض اوقات صرف دس منٹ یا اس سے بھی کم کے لیے، یہ سب ان کی حکمت عملی میں شامل ہے۔

ظاہر ہے، قیمتوں کے یہ اتار چڑھاو اتنے بڑے نہیں ہو سکتے۔ ڈے ٹریڈرز، فرق پیدا کرنے کے لیے، بڑے سائزز کے حامل لاٹ خریدتے ہیں، بعض اوقات اپنے ممکنہ فوائد میں اضافہ کرنے کے لیے لیوریج کا استعمال کرتے ہیں۔ تاہم ایک کامیاب ڈے ٹریڈر بننے کی کلید ٹریڈنگ میں مستقل مزاجی اور ایک مستحکم ٹریڈنگ حکمت عملی ہے جو اس طرزِ ٹریڈنگ سے وابستہ تمام خطرات کو مدنظر رکھتی ہے۔

1097-02.png

ڈے ٹریڈر کیسے بنیں

ڈے ٹریڈر بننے سے قبل، آپ کو اس بات پر غور کرنے کی ضرورت ہے کہ آیا آپ ٹریڈنگ کو اپنی کُل وقتی ملازمت بنانے کے لیے تیار ہیں۔ قیمت کے چارٹس کو اسکین کرنے اور مالیاتی مارکیٹس میں ہونے والی اپ ڈیٹس کی خبروں سے متعلق باخبر رہنے کے لیے، آپ کو روزانہ کئی گھنٹے اسکرین کے سامنے بیٹھ کر گزارنے پڑیں گے۔ آپ کو کام کے دوران بہت کچھ سیکھنے کے لیے بھی تیار رہنا چاہیئے کیونکہ تھیوری ہر اس چیز کا احاطہ نہیں کرتی جو آپ کو جاننے کی ضرورت ہے۔

پھر، آپ کو یقینی بنانے کی ضرورت ہے کہ آپ کے پاس ٹریڈنگ کا معقول سرمایہ ہے۔ آپ جتنی زیادہ سکیورٹیز خریدنے کے قابل ہوں گے، آپ کا ممکنہ منافع اتنا ہی زیادہ ہو گا۔ آپ کو ان نتائج کو دیکھنے میں کافی وقت لگے گا جس کی آپ ایک مناسب سرمائے کے بغیر امید کر رہے ہیں۔

اس کے بعد، ڈے ٹریڈنگ کی بہترین حکمت عملیوں اور رسک مینیجمنٹ سے متعلق جانیں۔ ڈے ٹریڈنگ نہایت پُرخطر ہے، اس لیے سختی سے کاربند رہنے کے لیے ایک منصوبہ بنانے اور حفاظتی جال رکھنے سے آپ کو ممکنہ نقصانات کو کم کرنے اور ناکام ٹریڈز سے اپنے سرمائے کو بچانے میں مدد ملے گی۔

ڈے ٹریڈنگ: کیریئر کے راستے

ڈے ٹریڈرز یا تو ذاتی طور پر اور اپنے گھر میں سہولت سے کام کر سکتے ہیں، یا وہ کسی بڑے مالیاتی ادارے کے لیے کام کر سکتے ہیں۔ دونوں آپشنز کے اپنے فائدے اور نقصانات ہوتے ہیں۔

ذاتی طور پر کام کرنے والے ٹریڈرز کو مالیاتی انسٹرومنٹس کے ساتھ کام کرنے کے لیے ڈگری کی ضرورت نہیں ہوتی۔ وہ اپنے تمام منافع جات کو اپنے پاس رکھتے ہیں اور اپنے کام کے دن کی منصوبہ بندی اپنے ذاتی اہداف کے مطابق کر سکتے ہیں۔ وہ کسی باس کی زیرِ نگرانی نہیں ہوتے اور انہیں کسی ایسے اہداف یا معیارات کو پورا کرنے کی ضرورت نہیں ہوتی جو مالیاتی ادارے اپنے ملازمین کے لیے مقرر کر سکتے ہیں۔ لیکن اسی دوران، ذاتی طور پر کام کرنے والے ڈے ٹریڈرز کو ملازمت کے لیے سکیورٹی حاصل نہیں ہوتی، نہ ہی انہیں ترقی کے کوئی مواقع دستیاب ہوتے ہیں۔

جہاں تک بڑے اداروں میں ملازمت کرنے والے ٹریڈرز کا تعلق ہے، تو انہیں ملازمت حاصل کرنے کے لیے مالیات کی ڈگری لینا ضروری ہے۔ بڑی کمپنیز میں کام کرنے کے فوائد میں یہ شامل ہے کہ ڈے ٹریڈرز اپنی ٹریڈز کرنے کے لیے کمپنی کا سرمایہ استعمال کرتے ہیں، اس طرح وہ اپنے ذاتی پیسے کو نقصان سے بچاتے ہیں۔ مزید برآں، چونکہ بڑی کمپنیز کے پاس زیادہ سرمایہ ہوتا ہے، اس لیے پروفیشنل ڈے ٹریڈرز کے پاس بڑی ٹریڈز کرنے کے مواقع موجود ہوتے ہیں۔ منفی پہلو، چونکہ پروفیشنل ڈے ٹریڈرز عموماً تنخواہ دار ملازمین ہوتے ہیں، اس لیے وہ اپنے منافع جات اپنے پاس نہیں رکھ سکتے۔ ذاتی طور پر کام کرنے والے ٹریڈرز کی نسبت انہیں آزادی حاصل نہیں ہوتی اور انہیں اپنی ٹریڈنگ حکمت عملی تیار کرتے وقت اپنی کمپنی کے اوقات کار اور پالیسیز پر عمل کرنا ضروری ہوتا ہے۔ تاہم، ان نقصانات کو فوائد کے طور پر دیکھا جا سکتا ہے کیونکہ پروفیشنل طور پر ملازمت یافتہ ڈے ٹریڈرز کو ملازمت کی سکیورٹی یا زیادہ کام کے حوالے سے کوئی فکر لاحق نہیں ہوتی۔

1097-03.png

ڈے ٹریڈنگ میں کمائی کی صلاحیت کو کیا چیز متاثر کرتی ہے

ڈے ٹریڈنگ کیریئر کا ایک غیر مستحکم انتخاب ہے، اور آپ کے منافع جات کا دارومدار متعدد مختلف عوامل پر ہوتا ہے، جن میں سے کچھ آپ کے کنٹرول سے باہر ہیں۔ تاہم چند چیزیں ہیں جن کا آپ خیال رکھ سکتے ہیں جو مستحکم منافع جات حاصل کرنے میں آپ کی مدد کر سکتی ہیں:

  • سرمایہ۔ ہم پہلے ہی سرمائے سے متعلق بات کر چکے ہیں نیز یہ کسی بھی ٹریڈر کے لیے کتنی اہمیت رکھتا ہے۔ خصوصاً یہ ڈے ٹریڈنگ میں بہت اہم ہے کیونکہ قیمت کے کم اتار چڑھاؤ سے استفادہ کرنے کے لیے آپ کو ایک ساتھ متعدد سکیورٹیز کی خرید و فروخت کرنے کی ضرورت ہوتی ہے۔ $1,000 کا سرمایہ آپ کو $100 سے زائد سکیورٹیز دلا سکتا ہے اور مستقبل کی ٹریڈز سے حاصل ہونے والے ممکنہ منافع میں اضافہ کرتا ہے۔
  • ٹولز۔ اپنے طور پر انہیں تلاش کرنے کی نسبت پروفیشنل ٹولز اور انڈیکیٹرز کا استعمال آپ کو ٹریڈنگ کے بہترین مواقع تلاش کرنے میں مدد دیتا ہے۔ یقیناً، ہر ٹول ذاتی کام کرنے والے ٹریڈرز کو دستیاب نہیں ہے۔ اس حوالے سے، مالیاتی ادارے کے لیے کام کرنا فائدہ مند ہے کیونکہ یہ آپ کو بہتر سافٹ ویئر تک رسائی فراہم کرتا ہے جو ٹریڈنگ کو آسان ترین اور زیادہ منافع بخش بنا سکتا ہے۔
  • وقت۔ ڈے ٹریڈنگ طویل المدتی ٹریڈنگ کے طریقوں سے مختلف ہے کیونکہ آپ کو نمایاں منافع کمانے کے لیے ہر روز کئی گھنٹے لگانے پڑتے ہیں۔ اگر آپ کثرت سے ٹریڈ نہیں کرتے ہیں تو آپ ٹریڈنگ کا ایک مستحکم منصوبہ تیار کرنے یا اپنی ٹریڈز سے مستقل آمدن کمانے کے قابل نہیں ہوں گے۔ یہی وجہ ہے کہ کُل وقتی ملازمت کرتے ہوئے ایک ہی وقت میں ایک ڈے ٹریڈر بننا تقریباً ناممکن ہے۔

ڈے ٹریڈر کی تنخواہ

ڈے ٹریڈنگ طویل عرصے سے ایک اعلیٰ کمائی والے کیریئر کے راستے کے طور پر شہرت رکھتی ہے، تاہم حقیقت اس سے کہیں زیادہ پیچیدہ ہے۔ ڈے ٹریڈرز کی مہارت کی سطح، ان کا سرمایہ، وہ جن مارکیٹس میں کام کرتے ہیں، حکمت عملی جو وہ اپنے کام میں استعمال کرنے کو ترجیح دیتے ہیں اور دیگر عوامل ان کی کمائی کو متاثر کر سکتے ہیں۔

zippia.com کے مطابق، ریاست ہائے متحدہ میں ڈے ٹریڈرز کی سالانہ اوسط تنخواہ $116,895 ہے۔ تاہم، اس اعداد و شمار میں صرف وہ ٹریڈرز شامل ہیں جو اپنے مستحکم سرمائے کی بدولت مستقل آمدن کمانے کے قابل ہوتے ہیں۔

سرمائے میں اضافہ ایک اور عنصر ہے جس کا حساب لگانا خاصا مشکل ہے۔ اگر آپ کے پاس سرمایہ صرف $100 ہے، تو $1,000 کے منافع کا مطلب ہے کہ آپ کا کُل نفع 1,000% تک پہنچ گیا ہے۔ تاہم $10,000 کے ابتدائی سرمائے کے ساتھ یکساں منافع کا مطلب سرمائے میں صرف 10% اضافہ ہے۔ تاہم، اس انڈیکیٹر کو مجموعی شماریات میں شاذ و نادر ہی مدنظر رکھا جاتا ہے۔

تاہم بہت سے لوگ اس حقیقت کو نظر انداز کرتے ہیں کہ محض 20% ٹریڈرز ہی ڈے ٹریڈنگ کو ایک مستحکم کیریئر بنانے میں کامیاب ہوتے ہیں۔ متعدد ٹریڈرز جب پہلی بار ڈے ٹریڈنگ کا آغاز کرتے ہیں تو نقصان اٹھاتے ہیں اور ایک مضبوط ٹریڈنگ حکمت عملی تیار کرنے سے قبل ہار مان لیتے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ ہر ٹریڈ کی منصوبہ بندی کرنا اور اپنے قیمت کے اہداف پہلے سے لکھ لینا نہایت ضروری ہے۔ غور و فکر کے بعد تیار کردہ اچھی حکمت عملی کا ہونا آپ کو مستقبل کے بہت سے مسائل اور غلطیوں سے بچنے میں مدد دے سکتا ہے جو آپ کے پورے ٹریڈنگ اکاؤنٹ کو ختم کرنے کا سبب بن سکتی ہیں۔

بطور ڈے ٹریڈر آپ ایک دن میں کتنی ٹریڈز کر سکتے ہیں؟

ٹریڈنگ ضوابط کے مطابق، اگر آپ پانچ کاروباری ایام کے دوران چار یا اس سے زیادہ ٹریڈز کرتے ہیں تو آپ کو ڈے ٹریڈر سمجھا جاتا ہے۔ تاہم، مختلف الگورتھمک اور اعلی تعدد کے حامل ٹریڈنگ ٹولز کی بدولت، ڈے ٹریڈرز اب بہت سے ٹاسکس خود کار طور پر کر سکتے ہیں اور اپنی مجموعی پیداواری صلاحیت کو بڑھا سکتے ہیں۔ عموماً، ایک اوسط ڈے ٹریڈر روزانہ پانچ سے تیس ٹریڈز کرتا ہے، حالانکہ اس تعداد کو خصوصی سافٹ ویئر کی مدد سے بڑھایا جا سکتا ہے۔

ڈے ٹریڈرز میں کامیابی کی شرح کیا ہے؟

ڈے ٹریڈنگ مستقل منافع کمانے کا ایک مشکل ترین طریقہ ہے۔ بزنس انسائیڈر کے جمع کردہ شماریاتی ڈیٹا کے مطابق، – 5% سے 20% – ڈے ٹریڈرز کی محض ایک معمولی سی تعداد ٹریڈنگ کی دنیا میں کامیاب ہوتی ہے اور مستقل طور پر منافع جات کا حصول جاری رکھتی ہے۔ باقی کے ٹریڈرز اتنے خوش قسمت نہیں ہوتے اور عموماً زیادہ منافع کمائے بغیر اپنا سرمایہ کھو دیتے ہیں۔

کیا ڈے ٹریڈنگ میں کوئی مالی خطرات شامل ہیں؟

اس کا جواب ہاں ہے۔ ڈے ٹریڈرز کو بھی دیگر ٹریڈرز کی طرح پیسے کھونے کا خطرہ ہوتا ہے، خصوصاً تب جب مستقل آمدن کمانے کے لیے انہیں اکثر اوقات اپنے اکاؤنٹس کے ایک بڑے حصے کو خطرے میں ڈالنا پڑتا ہے۔ تجربہ کار ڈے ٹریڈرز اپنے خطرات کو کم کرنے کے لیے، قیمت کے اہداف اور اسٹاپ لاس آرڈرز کو ترتیب دینے کا طریقہ جانتے ہیں، جس سے انہیں ہونے والے نقصانات کی تعداد کو محدود کرنے میں مدد ملتی ہے۔

خلاصہ

مجموعی طور پر، ڈے ٹریڈنگ ایک بہت ہی منافع بخش ملازمت ہو سکتی ہے، اگرچہ اس کے کچھ پوشیدہ خطرات ہوتے ہیں۔ خواہش مند ڈے ٹریڈرز کو یہ ذہن نشین کرنے کی ضرورت ہے کہ ڈے ٹریڈنگ کے ساتھ مکمل طور پر وابستہ ہونے کا فیصلہ کرنے سے قبل رسک مینیجمنٹ کی حکمت عملیاں استعمال کریں اور ٹریڈنگ منصوبہ تخلیق کریں۔ مارکیٹ کے حوالے سے اپنے علم میں اضافہ کرنے کے لیے FBS تجزیہ کاران کے تجزیاتی اور معلوماتی آرٹیکلز پڑھیں۔ سیکھنا جاری رکھیں، اور اپنے فیصلوں پر ثابت قدم رہیں۔ بڑے کھلاڑی اسی طرح عمل کر کے دکھاتے ہیں، اور ہم ان سے سیکھنے کا مشورہ دیتے ہیں۔

  • 130

ڈیٹا جمع کرنے کا نوٹس

ایف بی ایس اس ویب سائٹ کو چلانے کے لئے آپ کا ریکارڈ ترتیب دیتا ہے۔ "قبول" کا بٹن دبانے سے آپ ہماری پرائویسی پالیسی پر اتفاق کرتے ہیں۔

دوبارہ کال کریں

ایک مینجر جلد ہی آپکو کال کرے گا

نمبر تبدیل کریں

آپ کی درخواست موصول ہو گئ ہے

ایک مینجر جلد ہی آپکو کال کرے گا

اس فون نمبر کیلئے اگلی کال بیک کی درخواست
۔ میں دستیاب ہوگی

اگر آپ کو کوئی فوری مسئلہ درپیش ہے تو براہ کرم ہم سے رابطہ کریں
لائیو چیٹ کے ذریعے

اندروانی مسئلہ ،تھوڑی دیر بعد کوشش کریں

اپنا وقت ضائع نہ کریں – اس بات پر نظر رکھیں کہ NFP امریکی ڈالر اور منافع کو کس طرح متاثر کرسکتا ہے!

آپ اپنے براؤزر کے پرانا ورژن کا استعمال کر رہے ہیں.

اپ ڈیٹ کریں اور محفوظ، مزید آرام دہ، پرسکون اور پیداواری ٹریڈنگ کے تجربے کے لئے ایک کوشش کریں.

Safari Chrome Firefox Opera