حدود

حدود

حدود کی ٹریڈنگ اس وقت عمل میں آتی ہے جب مارکیٹ کی کوئی واضح سمت نہ ہو. تیزی یا مندی میں سے کوئی بھی رجحان کو شروع نہ کر سکتا ہو، اور قیمت درمیانی سمت سے چل رہی ہو. ابھی، اوپر کا رجحان یا نیچے کا رجحان کا نہ ہونا وجہ نہیں ہے ٹریڈنگ سے گریز کرنے کی. یہ عین ممکن ہے کہ منافع حاصل کیا جائے جب کہ مارکیٹ حد کے گرد باؤنڈ ہو.

رینج ٹریڈرز گنتے ہیں اس حقیقت پر کہ قیمتیں کچھ وقت تک ایک ہی افقی سطح کے درمیان ٹریڈ کریں گی. وہ امید کرتے ہیں کہ قیمت پھر جائے گی مزاہمت اور حمایت سے بہت سی دفعہ. ٹریڈر کا ہدف قیمتوں کے اتار چڑھاؤ سے فائدہ لینا ہوتا ہے حد کے اندر رہتے ہوئے مزاہمت پر بیچ کر اور حمایت میں خرید کر.

1.png

نوٹ کریں کہ اہم کرنسی جوڑیاں (EUR/USD, GBP/USD, USD/JPY, AUD/USD, NZD/USD, اور USD/CAD) مزید رجحان کی طرف ہوتی ہیں. ان کے اوپر بھی استحکام کر وقت آتا ہے، مگر پھر بھی وہ رینج ٹریڈنگ کے لیے غیر مناسب ہیں. کروسز (EUR/GBP, CHF/JPY, AUD/CAD, اور GBP/JPY) حدود میں زیادہ وقت لگاتے ہیں.

رینج میں کیسے ٹریڈ کی جائے؟

رینج ٹریڈر کے لیے پہلا مرحلہ رینج کی سرحدوں کو بیان کرنا ہے یا، دوسرے الفاظ میں، حمایت یا مزاہمت تلاش کرنا. ایسا کرنے کا آسان طریقہ یہ ہے کہ چارٹ پر پرانے ہائی اور لو چیک کریں. اگر ہائی افقی لکیر پر آتے ہیں تو لو بھی تو، شاید آپ کو مزاہمت اور حمایت کے علاقے مل جائیں. ظاہر ہے، حقیقت میں، ہائی اس ہی لکیر پر نہیں ہوتے ہیں اور نہ ہی لو. تاہم، اپ رجحان کے لیے بڑے ہائی اور بڑے لوز نہیں بناتی ہے (یا کم ہائی یا کم لوز جو کہ داؤن رجحان کی طرف اشارہ کرے). بولنگر بینڈزرینج کی سرحدوں کو ٹریک کرنے میں مدد دیتا ہے کیونکہ یہ حرکت والی حمایت اور مزاہمت کی نمائندگی کرتا ہے جو کہ اس کو محدود کر دیتی ہے.

2.png

دوسرا مرحلہ قیمت کی زیادہ خریداری اور زیادہ فروخت کو ٹریک کرنا ہے. خیال یہ ہے کہ بیچا جائے جب کرنسی جوڑا زیادہ خریداری میں ہو (مزاہمت پر) اور خریدا جائے جب یہ زیادہ فروخت میں ہو (حمایت پر). پہچاننے کے لیے زیادہ خریداری/زیادہ فروخت حالات، ٹریڈرز تکنیکی اشارے استعمال کرتے ہیں جن کو "اوسیلیٹرز" کہا جاتا ہے. یہ اشارے مرکزی سطح کے گرد گھومتے ہیں.

جب اوسیلیٹر ایک مرکزی لکیر سے نکلتا ہے اور اوپر کی طرف وہ ایک انتہائی علاقے پر پہنچتا ہے، اس کا مطلب بنتا ہے کہ جوڑا زیادہ خریداری میں ہے. اگر جوڑا مزاہمت کے زون کے قریب ہے تو یہ بیچنے کا وقت ہے.جب ایک اوسیلیٹر مرکزی لکیر سے گرتا ہے اور نیچے کی طرف وہ ایک انتہائی علاقے پر پہنچتا ہے، اس کا مطلب بنتا ہے کہ جوڑا زیادہ فروخت میں ہے. اگر جوڑا حمایت کے زون کے قریب ہے تو یہ خریدنے کا وقت ہے.سب سے زیادہ مشہور اوسیلیٹر RSI, CCI اور سٹوچسٹکز ہیں. سٹوچسٹکز قیمت کی حرکت کے لہٰذ سے سب سے زیادہ حساس لگتے ہیں.

خلاصہ، قیمتیں سرحدوں کی کسی ایک حد تک جاتی ہیں اور اوسیلیٹر سے سگنل ٹریڈ میں داخل ہونے کے لیے ایک ٹریگر ہوتا ہے. ایک کامیاب ٹریڈ ہونے کے امکانات زیادہ ہوں گے اگر مزاہمت/حمایت کے نزدیک دوبارہ پلٹنے والا مومبتی نمونہ ہو.

3.png

خطرات منظم کرنا

یہ ہمیشہ ضروری ہے کہ ٹریڈنگ خطرات کو محدود کیا جائے. حد ٹریڈرز کا مرکزی خطرہ یہ ہوتا ہے کہ حد ٹوٹ جاتی ہے. کامیاب حد ٹریڈنگ حکمت عملی میں چھوٹے لگاتار فائدے اور کم نقصانات شامل ہیں.

حد ٹریڈنگ اس وقت اچھی ہے جب مارکیٹ اتار چڑھاؤ کا شکار نہیں ہوتی ہے. نتیجے کے طور پر، یہ نہیں تجویز کیا جاتا کہ حدود میں ٹریڈ کیا جائے اس وقت جب کہ اتار چڑھاؤ اپنے عروج پر ہو. خبروں کے پروگرام ایک ہی سمت میں قیمت بہت دور تک بھیج سکتے ہیں. نتیجے کے طور پر، اگر آپ حد ٹریڈنگ کرنے کا منصوبہ بناتے ہیں، چیک کریں معاشی کیلنڈر تاکہ یہ یقینی بنایا جا سکے کہ کوئی بھی اہم جاری کردہ شیڈول نہیں ہیں ان کرنسیوں کے لیے جو آپ چن چکے ہیں.

منافع حاصل کرنا اور نقصان روکنا حد ٹریڈنگ میں بہت سادہ ہیں. منافع حاصل کرنا حد کی مخالف سمت میں، جب کہ نقصان روکنا سیٹ ہے تقریبا حد کے نصف طول و عرض تک. یہ مہیا کرتا ہے وسیع کمرہ نقصانات کو روکنے کے لیے. جب کہ اس ہی وقت میں یہ 2:1 ریوارڈ رسک ریشو کو بچاتا ہے. یہ نہیں تجویز کیا جاتا کہ پوزیشن سے سکیل ان یا سکیل آؤٹ کیا جائے. سب سے پہلے، ٹریڈ میں شامل کرنا غیر ضروری طور پر آپ کے خطرے کے انکشاف کو بڑھا دیتا ہے. دوسرا، یہاں کوئی بھی حقیقی نقطہ نہیں ہے کہ ٹریڈ کو آدھا بند کر دیا جائے کیونکہ منافع حاصل کرنا کوئی اتنا دور نہیں ہے.

اختتامیہ

رینج ٹریڈنگ کی سادہ سی منطق ہے اور اس میں نو آموز ٹریڈرز بھی طاق ہو سکتے ہیں. اس ہی وقت، مگر یہ ضروری ہے کہ اس کو یاد رکھا جائے جب کہ رینج میں مارکیٹ ایک غیر یقینی صورتحال میں ہوتی ہے. رینج کی سرحد ہو سکتا ہے کہ فلوئڈ ہو اور اچانک بھی شروع ہو سکتا ہے. اس کے نتیجے میں، اس طرح کی ٹریڈنگ میں نظم و ضبط اور خطرات کو منظم کرنے کی ضرورت ہوتی ہے.

تازہ ترین خبریں

دی بینک آف انگلینڈ GBP کو سپورٹ کر سکتا ہے

دی بینک آف انگلینڈ اپنی مونیٹری پالیسی کا خلاصہ اور شرح سود کی قیمت کو 20 جون کو 14:00 MT ٹائم پر جاری کرے گا.

FOMC سٹیٹمنٹ کیلئے تیار ہو جائیں

دی فیڈرل اوپن مارکیٹ کمیٹی اپنی سٹیٹمنٹ اور آفیشل ریٹ کا اعلان 19 جون، 21:00 MT ٹائم پر کرے گی۔

USD کے لئے ایک اور موقع

ریٹیل اور کور ریٹیل سیلز کا لیول 14 جون، 15:30 MT ٹائم پر جاری ہوگا۔

ڈپوزٹ کریں اپنے لوکل طریقوں سے۔

دوبارہ کال کریں

ایک مینجر جلد ہی آپکو کال کرے گا

نمبر تبدیل کریں

آپ کی درخواست موصول ہو گئ ہے

ایک مینجر جلد ہی آپکو کال کرے گا

اندروانی مسئلہ ،تھوڑی دیر بعد کوشش کریں

اہم چیزیں شروع کرنے کیکے
اپنا ای میل لکھیں اور مفت فوریکس گائیڈ بک وصول کریں

فاریکس پر نئے آنے والوں کیلئے یہ کتاب ٹریڈنگ کی دنیا کے بارے میں رہنمائی کرتی ہے۔

کتاب حاصل کرنے کیلئے اپنا ای میل داخل کریں

شکریہ آپکا ای میل موصول ہو چکا ہے

۔لنک پر کلک کریں اور اپنی فوریکس گائیڈ بک وصول کریں۔

آپ اپنے براؤزر کے پرانا ورژن کا استعمال کر رہے ہیں.

اپ ڈیٹ کریں اور محفوظ، مزید آرام دہ، پرسکون اور پیداواری ٹریڈنگ کے تجربے کے لئے ایک کوشش کریں.

Safari Chrome Firefox Opera